*رپورٹ برائے سیشن اسلام آباد لٹریچر فیسٹیول”نئی عورت,نیا اسلوب”*

 

مورخہ  28 ستمبر 2019 بروز ہفتہ ،مارگلہ ہوٹل اسلام آباد میں منعقدہ”اسلام آباد لٹریچر فیسٹیول”  میں  ینگ ویمن رائٹرز فورم اسلام آباد چیپٹر کو نمائندگی کا موقع دیا گیا۔ادبی سیشن بعنوان “نئی عورت نیا اسلوب” کی ماڈریٹر ینگ ویمن رائٹرز فورم اسلام آباد چیپٹر کی صدر محترمہ فرحین خالد تھیں جبکہ دیگر شرکائے گفتگو  میں  محترمہ منزیٰ گیلانی،محترمہ صفیہ شاہد،محترمہ ابصار فاطمہ اور محترمہ  معافیہ شیخ شامل تھیں۔ادب کی نامور شخصیات،اور مختلف این جی اوز کے نمائندوں نے اس سیشن میں شرکت کی اور شرکاء کی گفتگو کو سراہا۔

 

فورم کے زیر اہتمام  رواں سال منظرعام پر آنے والی کتاب “نئی عورت نیا اسلوب “پر سیر حاصل گفتگو ہوئی۔فورم کی فاؤنڈر محترمہ بشریٰ اقبال ملک نے کہا کہ

“اگر ہمارے گھروں  میں موجود باپ بھائی سبھی مرد اچھے ہیں تو  خرابی کہاں پہ ہے اور ہماری خواتین اتنے مسائل میں کیوں گھری ہوئی ہیں۔ہمیں ان مسائل کے ماخذات کو دیکھنا ہو گا اور عورت  کو حقوق دلانے کے لیے عملی کردار ادا کرنا ہوگا”

 

سائیٹ سیورز کی کنٹری ڈائریکٹر محترمہ منزیٰ گیلانی نے کہا کہ

“ہمارا ادارہ بصیرت سے محروم افراد کے مسائل کے حل کے لیے کام کر رہا ہے اور اپنی خدمات پیش کرتا رہے گا”

 

صفیہ شاہد نے کہا کہ “تانیثیت محض ایک لفظ نہیں ہے کہ لوگ اس پر طنزیہ  مسکرا دیں بلکہ یہ ایک تحریک  ہے جس میں عورت اپنے حقوق کے حصول اور ادراک کے لیے  معاشرے سے اور  خود سے جنگ کر رہی ہے ”

 

معافیہ شیخ نے کتاب میں شامل تمام افسانہ نگاروں اور ادبی شخصیات کی تحریروں کا مختصر خاکہ اور تعارف پیش کیا۔

محترمہ ابصار فاطمہ نے ماہر نفسیات ہونے کے ناتے معاشرتی کرداروں کی نفسیات پر سیر حاصل گفتگو کی۔

حاضرین محفل نے مہمانان گرامی سے سوالات بھی کیے جن کے تسلی بخش جوابات دیے گئے…

مجموعی طور پر یہ سیشن بہت کامیاب رہا جس میں ابھرتی ہوئی نوجوان تخلیق کار خواتین کو نمائندگی ملنے کو بہت سراہا گیا اور نئی سوچ کی تازہ لہر پر کشور ناہید جیسی عظیم ادبی ہستی کی جانب سے اعتماد اور اطمینان کا اظہار کیا گیا۔